سیکریٹری جنرل سے متعلق خبریں

اسلامی انقلاب شہداء کے خون اور عقلمند رہبر کی رہنمائی سے آگے بڑھ رہا ہے: آقائے اختری

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔  ایران کے شہر کرمان میں آیت اللہ شہید بہشتی اور ان کے ساتھیوں کی شہادت کی سالگرہ کے عنوان سے گزشتہ شب منعقدہ تقریب میں خطاب کرتے ہوئے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سربراہ حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے کہا: رہبر انقلاب اسلامی نے اس دہائی کو مظلومیت کی دہائی سے تعبیر کیا ہے جس میں آیت اللہ شہید بہشتی اور ان کے ۷۲ ساتھی مظلومانہ طریقے سے پارلیمنٹ میں دھماکے کے ذریعے شہید کئے گئے۔
انہوں نے ملک میں پائے جانے والے امن و سکون کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: اسلامی انقلاب آج شہداء کے خون کی برکت اور عقلمند، دانا، سیاست مدار اور دانشور رہبر کی رہبریت کی بدولت امن و شانتی کے ساتھ ترقی کے سفر پر گامزن ہے۔
آقائے اختری نے مزید کہا: آج اقوام عالم کے اندر بیداری پیدا ہو رہی ہے نہ صرف مسلمانوں بلکہ غیر مسلمانوں کے اندر بھی بیداری کی کرنیں پھوٹ چکی ہیں۔
انہوں نے کہا: تیرہ سو ساٹھ (ایرانی سال) کی دہائی میں دشمن پورے منصوبہ بندی کے ساتھ میدان میں اترا تاکہ موقع ملتے ہی انقلاب کے طومار کو لپیٹ دے اور اسلامی نظام حکومت کی شمع کو ہمیشہ کے لیے گل کر دے۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکریٹری جنرل نے کہا: امام خمینی(رہ) نے اپنی آگاہانہ تدبیر سے اس وقت جب پارلیمنٹ کی اکثریت کو شہید کر کے نظام حکومت کی کشتی میں لرزہ پیدا کر دیا تھا ایران کے اسلامی معاشرے کی امیدوں پر پانی نہیں پھرنے دیا اور اسلامی انقلاب کی ڈگمگاتی ہوئی کشتی کو استحکام بخش دیا۔
انہوں نے کہا کہ آپ آج بھی دیکھ رہے ہیں کہ منافق دشمن کس طریقے سے اسلامی جمہوری نظام کو ختم کرنے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگا رہے ہیں اور ہر طرح کے جرم کا ارتکاب کرنے سے گریز نہیں کرتے۔
انہوں نے ایرانی معاشرے کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ہوشیار رہیں دشمن ان افراد کو اپنے زیر اثر کرنے کی کوشش کرتا ہے جو بے دین ہیں، بے ایمان، خود باختہ اور ضعیف العقیدہ ہیں چاہے شیعہ ہوں یا سنی۔ داعش جیسے ٹولوں نے ایسے ہی افراد سے فائدہ اٹھایا ہے۔
انہوں نے تاکید کی کہ ایسے ماحول میں ایران کے شیعہ سنی معاشرے میں بہت زیادہ اتحاد اور ہمدلی کی ضرورت ہے۔

عالم اسلام بحرین میں آل خلیفہ کے جرائم کا ذمہ دار/ آل سعود نے انسان اور انسانیت کی کوئی عزت باقی نہیں چھوڑی

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ بحرین کے شہدائے مزاحمت کی یاد میں اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی جانب سے قم میں مراجع عظام اور علماء کرام کی موجودگی میں منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے شہداء بحرین کو خراج تحسین پیش کیا۔
 تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے بحرین کے مظلوم شہداء کو راہ حق کے شہید اور مکتب اہل اہل بیت(ع) کے مدافع قرار دیتے ہوئے بارگاہ خداوندی سے ان کے درجات کی بلندی کے لیے دعا کی۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکریٹری جنرل نے کہا: صدر اسلام سے ہی شہادت کو ایک عظیم مقام کے عنوان سے جانا جاتا تھا امام علی علیہ السلام نے مالک اشتر کو لکھے ہوئے اپنے خط میں اس بات کی خواہش ظاہر کی کہ خداوند عالم ہم دونوں کی زندگیوں کا شہادت پر خاتمہ کرے۔
انہوں نے کہا: حریم فقاہت کے مدافع شہداء عظیم مقام پر فائز ہوئے ہیں خداوند عالم قیامت میں شہداء کے نامہ اعمال کو ظاہر نہیں کرے گا اور شہادت کی وجہ سے ان کے نامہ اعمال چھپا دئے جائیں گے۔
انہوں نے آل خلیفہ حکومت کے تشدد کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا: آل خلیفہ حکومت نے ان شہداء کے جنازوں کو ان کے گھر والوں کو نہیں دیا اور انہیں مخفی طور پر دفن کر دیا، میں شہدائے بحرین کے گھر والوں کو مبارک باد پیش کرتا ہوں جنہوں نے ایسے جوان تربیت کئے ہیں۔
حجۃ الاسلام اختری نے کہا: یہ شہداء جنہوں نے اسلام اور مکتب اہل بیت(ع) کے دفاع کی راہ میں اپنی قربانیاں پیش کی ہیں یہ پوری امت کے شہداء ہیں نہ صرف بحرین کے۔
 انہوں نے عراق میں آل سعود کے ناپاک عزائم کی طرف اشارہ کیا اور کہا: عراق کے اعلی فوجی افسر نے ایک ایرانی عہدیدار سے کہا تھا کہ اگر ایران، رہبر انقلاب اور مجاہدین نہ ہوتے تو حرم امام حسین (ع) کا نام و نشان باقی نہ رہتا۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی نے آل سعود کے تاریخچہ کی طرف اشارہ کیا اور کہا: یہ خاندان یہودیوں کی نسل میں سے ہے انہوں نے جنت البقیع کو مسمار کرنے کے بعد کربلا پر حملہ کیا، وہابی مفتیوں نے تمام اہل تشیع کے قتل عام کا فتویٰ دیا، لیکن وہ نہیں جانتے کہ مکتب اہل بیت(ع) ایسا شجرہ طیبہ ہے جسکی جڑوں کو اکھاڑنا اتنا آسان نہیں، آل سعود اور ان سے پہلے بنی امیہ نے اہل بیت(ع) کے چاہنے والوں کو ختم کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی، لیکن خداوند عالم کا ارادہ ہے کہ مکتب اہل بیت(ع) کا نور کبھی خاموش نہیں ہو سکتا۔
انہوں نے کہا: رہبر انقلاب اسلامی نے بارہا فرمایا ہے کہ مستقبل اسلام اور مکتب اہل بیت(ع) کا ہے یہ ایک قرآنی وعدہ ہے جو یقینا تحقق پا کر رہے گا۔

مسجدوں میں حاضری سے مومنین کے اندر بصیرت، محبت اور یکجہتی پیدا ہوتی ہے

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ ماہ مبارک رمضان کی آمد کے موقع پر مساجد کی صفائی کے عشرے میں اہل

بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکریٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین اختری نے ہمارے نامہ نگار سے گفتگو

کرتے ہوئے کہا: مساجد اللہ کا گھر اور الہی فرامین کو انجام دینے کے مقدس مقامات ہیں لہذا مسجدیں

مسلمانوں کے افکار کو ایک دوسرے سے قریب کرنے میں اہم رول ادا کرتی ہیں۔


انہوں نے مزید کہا: لوگوں کا مسجدوں میں حاضر ہونا ایک دوسرے سے قربت، محبت اور ہمدردی کا باعث بنتا

ہے لہذا ہمیں کوشش کرنا چاہیے کہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو مسجدوں کی طرف راغب کریں تاکہ ان میں

یکجہتی، اتحاد، محبت اور باہمی تعاون کا جذبہ پیدا ہو


جناب حجۃ الاسلام اختری نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ مسجد لوگوں کے درمیان محبت اور الفت

پیدا کرنے کا ایک بنیادی مرکز ہے، کہا: مختلف طبقوں اور قبیلوں کے لوگوں کے مسجدوں میں ایک ساتھ اکٹھا

ہونے سے ان کے درمیان تبادل آراء کا بستر مہیا ہوتا ہے جو ایک دوسرے کے افکار اور تجربات سے آگاہی کا

موجب بنتا ہے اور در نتیجہ ان میں بصیرت پیدا ہوتی ہے۔


انہوں نے کہا: مساجد میں مختلف پروگراموں کے انعقاد، علماء کی تقاریر اور دینی گفتگو سے مومنین کی

معلومات میں اضافہ اور دینی شعور اجاگر ہوتا ہے۔


اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکریٹری جنرل نے مزید کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی نے متعدد بار فرمایا

ہے کہ مسجدوں وغیرہ میں تعلیمی کلاسوں کے انعقاد کے ذریعے سماج کی بالیدگی میں تعاون کریں اس

لیے کہ اس صورت میں مساجد کو اتحاد، یکجہتی، محبت اور ہمدلی کے مراکد میں تبدیل کیا جاتا سکتا ہے۔


انہوں نے کہا کہ یہ اللہ کے گھر عصر حاضر میں سافٹ وار کے مقابلے میں اہم مورچوں کا رول ادا کر سکتے

ہیں اور دشمنوں کی طرف سے ہونے والی ثقافتی یلغار کا بخوبی مقابلہ کر سکتے ہیں۔


محمد حسن اختری نے کہا کہ دشمن یہ کوشش کر رہے ہیں کہ مسجدیں خالی ہو جائیں، غیر فعال ہو

جائیں لیکن ہمیں انہیں فعال کرنے کی کوشش کرنا چاہیے اس لیے کہ اللہ کے گھروں کا فعال ہونا سماجی

مشکلات کو دور کرنے کا سبب بنے گا۔

بین الاقوامی سطح کی خبروں کا انعکاس بہت ضروری ہے: حجت الاسلام اختری

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اسلامی جمہوریہ ایران کی غیر ملکی میڈیا سروس کے عہدیداروں کے ساتھ

 ملاقات ہوئی اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کی ملاقات میں انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی سطح

کی خبروں کا بخوبی انعکاس انتہائی ضروری ہے۔


اس ملاقات میں ڈاکٹر محمد نژاد نے بیرون ملک اپنی سرگرمیوں کی رپورٹ پیش کرتے ہوئے اس میدان میں اہل

بیت (ع) عالمی اسمبلی سے تعاون کا مطالبہ کیا۔


اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے بین

الاقوامی سطح پر خبروں کے انعکاس کو ایک ضروری امر قرار دیتے ہوئے کہا کہ رہبر انقلاب اسلامی نے ادارہ

صدا و سیما کے نئے سربراہ کو اس بات کی طرف متوجہ بھی کیا تھا اور تاکید کی تھی کہ یہ کام بنحو احسن

انجام پانا چاہیے۔


انہوں نے اس حوالے سے مختلف زبانوں میں میڈیا کی سرگرمیوں کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ بین

الاقوامی سطح پر کام کرنے والے ذرائع ابلاغ جیسے العالم چینل نے عالمی استکبار کے جھوٹ اور حقائق کو

چھپانے کی پالیسیوں کو بہت اچھے سے مقابلہ کیا اور انہیں حقائق کو دنیا کے سامنے برملا کیا ہے۔


جناب محمد حسن اختری نے مزید کہا کہ غیر ملکی مسلمان ہمارے بیرون ملک میڈیا کے پروگراموں سے

راضی نہیں ہیں جس کی وجہ یہ ہے کہ ہم جس دید سے ایران کے اندر کے لیے پروگرام تیار کرتے ہیں اسی

دید سے دیگر ممالک کے لیے بھی پروگرام پیش کرتے ہیں جبکہ ایسا نہیں ہونا چاہیے۔


انہوں نے ایران کی غیر ملکی میڈیا سروس کے عہدیداروں کو اس بات پر یقین دلایا کہ ملک کے باہر کی

خبروں کو ایران کے اندر کی سیاست اور دید کے مطابق منعکس نہ کریں ۔


اس ملاقات میں اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی ابنا کے چیف ایڈیٹر حجۃ الاسلام و المسلمین حسینی عارف نے

ایران کی غیر ملکی میڈیا سروس کے ساتھ بھرپور تعاون کے لیے اپنی آمادگی کا اظہار کیا۔

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی مسجدوں کی ظرفیت سے بخوبی فائدہ اٹھاتی ہے

اہل بیت(ع) نیوز ایجنسی۔ابنا۔ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے مساجد

کے مرکزی دفتر کے نامہ نگار سے گفتگو کرتے ہوئے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی

سرگرمیوں کی طرف اشارہ کیا اور کہا: اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی قرآن اور اہل بیت(ع)

کی تعلیمات کو عام کرنے کے میدان میں ایک فعال ادارہ ہے۔


حجۃ الاسلام و المسلمین اختری نے واقعہ غدیر کی نشر و اشاعت کو اسمبلی کے اہم

اہداف میں سے قرار دیتے ہوئے کہا: غدیر اسلام کا ایک اہم اور انتہائی قیمتی واقعہ ہے

جس کی نشر و اشاعت اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے مقاصد میں شامل ہے۔


انہوں نے مزید کہا: اسمبلی پورے سال بالخصوص عشرہ ولایت و امامت میں پوری دنیا

کے اسمبلی سے منسلک اداروں اور مقامی اسمبلیوں کے ذریعے غدیر کی تعلیمات کو

عام کرنے کے لیے اہم اقدامات انجام دیتی ہے۔


انہوں نے آخر میں کہا: اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے ذریعے انجام پانے والی

کانفرنسوں اور سیمیناروں کے انعقاد میں مساجد کا خاص رول ہے، اسی وجہ سے

ہمیشہ مساجد کے ائمہ جماعات کی صلاحیتوں کو بروئے کار لایا جاتا ہے اور مساجد اور

امام بارگاہوں سے مربوط اسمبلی کی کمیٹی پوری دنیا میں دینی مراکز کی پہچان

کرواتی اور ان سے دینی معارف کی نشر و اشاعت کی راہ میں بخوبی فائدہ اٹھانے کے

لیے منصوبہ بندی کرتی ہے۔

<<  1 2 3 [45  >>  

عالمی اہل بیت اسمبلی

مجمع جهانی اهل‎بیت(علیهم‎السلام)، به عنوان یک تشکل جهانی و غیردولتی، از طرف گروهی از نخبگان جهان اسلام تشکیل شده است. اهل‎بیت(علیهم‎السلام) به این دلیل بعنوان محور فعالیت انتخاب شده‎اند که در معارف اسلامی در کنار قرآن، محوری مقدس را که مورد پذیرش عامه مسلمین باشد، تشکیل می‎دهند.
مجمع جهانی اهل‎بیت(علیهم‎السلام) دارای اساسنامه‎ای مشتمل بر هشت فصل و سی و سه ماده است.

  • ایران - تهران - بلوارکشاورز - نبش خیابان قدس - پلاک 246
  • 888950827 (0098-21)
  • 888950827 (0098-21)

ہم سے رابطہ کریں

موضوع
دوستوں کوارسال کریں
خط
8+4=? سیکورٹی کوڈ