اسمبلی کی خبریں

سیکریٹری جنرل سے متعلق خبریں

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے زیر اہتمام منعقدہ تصویری رپورٹ/ ’’طلوع حقیقت‘‘ کانفرنس میں میڈیا کا کردار

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے زیر اہتمام منعقدہ تصویری رپورٹ/ ’’طلوع حقیقت‘‘ کانفرنس میں میڈیا کا کردار

 اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی جانب سے منعقدہ طلوع حقیقت کانفرنس کو کیوریج دینے کے لیے میڈیا نے بھرپور کردار ادا کیا
اور کانفرنس میں شریک اہم شخصیات سے انٹرویو لئے۔ اس کانفرنس میں
اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری کے علاوہ ایران کے وزیر خارجہ ڈاکٹر ظریف، مشیر رہبر انقلاب ڈاکٹر ولایتی اور دفتر رہبری کے سربراہ حجۃ الاسلام و المسلمین محمد محمدی گلپائیگانی نے تقاریر کیں۔

آیت اللہ عیسی قاسم کی تشویشناک حالت کے پیش نظر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سمیت انسانی حقوق کے عہدیداروں کے نام خط

آیت اللہ عیسی قاسم کی تشویشناک حالت کے پیش نظر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سمیت انسانی حقوق کے عہدیداروں کے نام خط

بحرین کے بزرگ عالم دین آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کی تشویشناک جسمانی صورتحال کے پیش نظر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل اور سات دیگر بین الاقوامی عہدیداروں کے نام ایک اہم خط تحریر کیا ہے۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی نے ایک عالمی ادارہ ہونے کی حیثیت سے اس خط کے ذریعے آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کے علاج و معالجہ کے لیے بین الاقوامی اداروں سے ایک ماہر اور قابل اطمینان ڈاکٹروں کی ٹیم کا مطالبہ کیا ہے۔
حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری کے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل ’’انتونیو گوٹیرس‘‘ کے نام خط کا مکمل ترجمہ:

بسم اللہ الرحمن الرحیم
محترم جناب انتونیو گوٹیرس صاحب
سیکرٹری جنرل برائے اقوام متحدہ
سلام علیکم
بعد از احترام، آپ جناب کی دنیا کے ممالک خاص طور پر بحرین میں انسانی حقوق کے دفاع کے حوالے سے قابل قدر کاوشوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے آپ کو اس خط کے ذریعے مطلع کیا جاتا ہے کہ افسوس سے بحرین کے بزرگ عالم دین اور اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے رکن آیت اللہ شیخ عیسی احمد قاسم کی طبیعت انتہائی ناسازگار ہے۔
یہ اہم شخصیت جنہیں کئی مہینوں سے گھر میں نظر بند کر رکھا ہے جسمانی طور پر صحت و سلامتی میں نہیں ہیں اور ان کے علاج کے لئے ایک تجربہ کار ڈاکٹروں کی ٹیم کی ضرورت ہے۔
جیسا کہ اس دینی رہبر کے قریبی رشتہ داروں اور قرابتداروں نے بتایا ہے شیخ عیسی قاسم کا آدھا وزن کم ہو گیا ہے اور ان کے معدے سے خونریزی بھی جاری ہے۔ یہ ایسے حال میں ہے کہ وہ اس سے پہلے بھی بلڈ پریشر، شوگر اور بڑھاپے کی وجہ سے کمزوری کا شکار ہیں۔
گھر پر محاصرہ کئے جانے اور طبی سہولیات فراہم نہ کئے جانے کی وجہ سے ان کا طبیب ٹھیک طرح سے ان کا علاج کرنے میں کامیاب نہیں ہو سکا اور اس نے واضح کہہ دیا ہے کہ شیخ عیسی قاسم کے متخصص ڈاکٹروں کی ٹیم کے ذریعے آپریشن کی ضرورت ہے۔
دوسری جانب سے آیت اللہ عیسی قاسم کے اہل خانہ، بحرینی حکومت کی جانب سے بھیجے جانے والے ڈاکٹروں پر بھروسہ نہیں کر رہے ہیں۔
مذکورہ باتوں کے پیش نظر، اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی ایک ایسا بین الاقوامی ادارہ جس کے ۱۲۰ ممالک سے اہم شخصیات رکن ہیں ہونے کی حیثیت سے اقوام متحدہ، اسلامی تعاون کونسل، ایمنسٹی انٹرنیشنل، انسانی حقوق کے ہائی کمیشنر، یورپی یونین اور ڈاکٹروں کی عالمی تنظیم نیز حریت پسند ممالک کے سربراہان کی توجہ درج ذیل نکات کی طرف مرکوز کرتے ہیں:
۱۔ آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کہولت اور نقاحت کی وجہ سے مزید بیماریوں کو برداشت کرنے کی طاقت نہیں رکھتے اور اس بات کا خوف پایا جاتا ہے کہ باقی ماندہ معمولی توانائی کے ختم ہو جانے سے اس بزرگ عالم دین کی جان یقینی خطرے سے دوچار ہو جائے۔
۲۔ بیمار انسان کو دوا اور علاج سے محروم کرنا، انسانی حقوق کی پامالی کا سب سے بڑا نمونہ ہے۔
۳۔ آل خلیفہ کی حکومت، تقریبا سات سال سے مختلف طریقوں سے انسانی حقوق اور اس ملک کے باشندوں کے شہری حقوق کو پامال کر رہی ہے۔ بیماروں کی دیکھ بھال کا امکان فراہم نہ کر کے اپنی حکومت کے دامن پر ایک اور سیاہ دھبہ اضافہ کر رہی ہے۔
۴۔ ہم عالمی تنظیم ہونے کے عنوان سے بین الاقوامی تنظیموں سے آیت اللہ شیخ عیسی قاسم کے علاج کے لئے ماہر اور قابل وثوق ڈاکٹروں کی ٹیم کا مطالبہ کرتے ہیں۔
۵۔ نیز انسانی حقوق کے سرگرم افراد اور مربوطہ تنظیموں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ شیخ عیسی قاسم کی شہریت کی منسوخی کے قانون کو واپس لینے اور ان کے گھر محاصرے کو خاتمہ دینے کے لئے بحرین کی قانون شکن حکومت پر دباؤ ڈالیں۔
۶۔ بیشک اس امر میں سستی برتنے کے نتیجے میں پیش آنے والے ہر ناگوار حادثہ کی براہ راست ذمہ داری حکومت بحرین اور اس کے بعد ان عالمی تنظیموں کے دوش پر ہو گی جو اس سلسلے میں سکوت اختیار کئے ہوئے ہیں۔
                                          مخلصانہ احترام کے ساتھ
                                            محمد حسن اختری
                             سیکرٹری جنرل برائے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی
                                            ۳۰،۱۱،۲۰۱۷

یہ خط اسی مضمون کے ساتھ درج ذیل چھے عہدیداروں کے نام بھی ارسال کیا گیا: 
یورپی کمیشن کے سربراہ مسٹر جین کلاڈ جنکر؛
یورپی پارلیمان کے صدر، انتونیو تاجانی؛
یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے لئے ذمہ دار مسز موگرینی؛
اقوام متحدہ کے ادارے انسانی حقوق کے ہائی کمشنر امیر زید رعد الحسن؛
اقوام متحدہ کی شعبہ مذہبی آزادی کی خصوصی رپورٹر محترمہ آسماء جہانگیر؛
غیر ملکی ڈاکٹروں کی تنظیم کی سربراہ محترمہ ڈاکٹر جوآن لیو.

مہدوی کلچر کی نشر و اشاعت میں میڈیا بنیادی کردار ادا کر سکتا ہے: آقائے اختری

مہدوی کلچر کی نشر و اشاعت میں میڈیا بنیادی کردار ادا کر سکتا ہے: آقائے اختری

’’مہدوی کلچر کی توسیع اور میڈیا‘‘ کے زیر عنوان تہران میں منعقدہ ایک کانفرنس کے دوران اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حضرت امام مہدی (عج) کی امامت کے دور میں پوری دنیا پر عدل الہی حاکمفرما ہو گا اور پوری دنیا اسی دور کی انتظار میں ہے۔
انہوں نے مزید کہا: آج کا سماج ایسا آئیڈیل سماج نہیں ہے جو ہمیں مہدویت کے مقصد کی طرف رہنمائی کر سکے۔ لہذا ہمیں ایسا سماج تشکیل دینے کی ضرورت ہے جس کے ذریعے ہم مہدوی کلچر کو متعارف کروا سکیں اور اس راہ میں میڈیا کا کردار سب سے اہم نظر آتا ہے۔
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل نے اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ پوری دنیا کی ۷ ارب آبادی میں ۳۶۰ ملین شیعہ ہیں جبکہ ساڑھے چھے ارب آبادی مہدویت کے موضوع سے ناآشنا ہیں۔ اس اعتبار سے ہماری یہ ذمہ داری ہے کہ ہم مہدوی کلچر اور مہدوی حکومت کے خد و خال سے دنیا کو آگاہ کرنے کے لیے دن رات زحمت اور محنت کریں۔
انہوں نے اس بات کو بیان کرتے ہوئے کہ دنیا میں مہدوی کلچر کی توسیع کی راہ میں میڈیا کا بہت بڑا کردار ہے کہا: مہدوی کلچر کی نشر و اشاعت کا ایک اہم طریقہ اس طرح کے موضوعات پر کانفرنسوں اور علمی نشستوں کا انعقاد ہے۔
انہوں نے کہا: آج انجیل اور توریت کو ۲ ہزار پانچ سو سے زیادہ زبانوں میں ترجمہ کیا جا چکا ہے لیکن ہم قرآن کریم کو ۱۵ زندہ زبانوں میں بھی ترجمہ نہیں کر سکے ہیں۔ اسی طرح نہج البلاغہ اور صحیفہ سجادیہ جو امام معصوم کا کلام ہے کو صحیح طریقے سے پہچنوا نہیں پائے ہیں۔
آقائے اختری نے تاکید کی کہ ہمیں اسلامی تعلیمات اور مہدوی کلچر کو دنیا کی زندہ زبان میں منتقل کر کے اس کی ترویج کرنا چاہئے۔ اسی طرح دنیا کے بڑے بڑے ذرائع ابلاغ میں اثر و رسوخ پیدا کر کے ان ذرائع سے اسلامی تعلیمات کو عام کرنے کی ضرورت ہے۔
انہوں نے مزید کہا: غیروں کا میڈیا اسلام مخالف سازشوں کے ذریعے مہدویت کے چہرے کو خدشہ دار کرنے میں جھٹا ہوا ہے۔ اسلام کو بدنام کرنے میں ان کا ایک کام یہ ہے کہ وہ تکفیری اور دھشتگرد ٹولیوں کی حمایت کرتے ہیں تاکہ ان کے ذریعے اسلام کو بدنام کروائیں ان سے مہدویت کے خلاف پروپیگنڈے کروائیں یہ لوگ خانہ خدا اور حرم رسول خدا(ص) سے حقیقی اسلام کی تعلیمات اور مہدوی کلچر کے خلاف تبلیغ کریں۔
انہوں نے کہا: دشمن کی سازشوں کا مقابلہ کرنے کے لئے ہمیں سائبری فضا سے لے کر اخباروں اور ٹی وی چینلوں تک ہر جگہ مہدوی کلچر کی نشر و اشاعت میں کوشاں رہنا چاہیے۔

داعش کی نابودی پر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا جنرل قاسم سلیمانی کو تہنیتی پیغام

داعش کی نابودی پر اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا جنرل قاسم سلیمانی کو تہنیتی پیغام

عراق و شام میں بدنام زمانہ تکفیری ٹولے داعش کی بھاری شکست اور مزاحمتی قوتوں کی عظیم کامیابی کے بعد اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کی قدس بٹالین کے کمانڈر ان چیف قاسم سلیمانی کو ایک تہنیتی پیغام بھیجا ہے۔
اس تہنیتی پیغام کا ترجمہ حسب ذیل ہے:
بسم الله الرحمن الرحیم
للهِ الأمرُ مِن قَبلُ و مِن بَعدُ و يَومَئِذٍ يَفرَحُ المُؤمِنُون؛ بِنَصرِ اللهِ يَنصُرُ مَن يَشَاءُ و هُوَ العَزیزُ الرَّحيم. (روم، 4 و 5)
(اللہ ہی کے لئے اول و آخر ہر زمانے کا اختیار ہے اور اسی دن صاحبان ایمان خوشی منائیں گے اللہ کی نصرت اور مدد کے سہارے کہ وہ جس کی امداد چاہتا ہے کردیتا ہے اور وہ صاحب عزت بھی ہے اور مہربان بھی)

برادر ارجمند جناب الحاج قاسم سلیمانی دام عزہ
قدس فورس کے کمانڈر ان چیف
سلام علیکم
انتہائی خوشی اور افتخار کا مقام ہے کہ دھشتگرد اور تکفیری ٹولیوں منجملہ ’’ خونخوار تکفیری ٹولی داعش‘‘ کہ جو وہابی تکفیری تفکر، آل سعود، آل یہود اور دیگر تشدد پسندانہ شیطانوں کی مالی حمایت اور امریکہ، برطانیہ، صہیونی ریاست اور اس کے اتحادیوں کی اسلحہ جاتی پشت پناہی کے ساتھ چھے سال علاقے میں طغیان گری اور خون خرابے میں مصروف تھے کی نابودی اور ’’اصلاح اور مزاحمت کی قوتوں‘‘ کی ’’دھشتگرد اور باطل طاقتوں‘‘ پر عظیم کامیابی کا جشن ماہ ربیع الاول کے مبارک ایام میں منا رہے ہیں۔ 
بے شک یہ نصرتِ عظیم رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمیٰ خامنہ ای کی حکیمانہ تدبیروں اور دقیق حمایتوں کی مرہون منت ہے جو باعث بنیں سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی، عراق اور شام کی فوج، حشد الشعبی، حزب اللہ لبنان، افغانستان اور پاکستان کے فی سبیل اللہ مجاہدوں کی چھے سالہ مسلسل جانفشانیوں اور مجاہدتوں نے تکفیری ٹولے داعش کو تاریخ کے کوڑے دان میں پھینک دیا اور حرم اہل بیت اور ان کے پیروکاروں کے لئے امن و سکون کی فضا فراہم کر دی۔
اس درمیان آپ کی بابصیرت، شجاعانہ اور مدبرانہ کاوشیں ہیں جنہوں نے اس کے علاوہ کہ عالمی استکبار کو مایوس کر دیا تکفیری دھشتگردوں کو بھاری شکست سے دوچار کر کے نابود کر دیا اور اسلامی جمہوریہ ایران کی شہید پرور قوم کو سربلندی اور سرفرازی عطا کی۔
اللہ کا یہ سچا وعدہ جو ان صاحبان ایمان کے لیے ہے جو ظالموں کے مقابلے میں اللہ کی قدرت پر ایمان رکھتے ہیں، محقق ہو گیا: "و قَد مَکَرُوا مَکرَهُم وَ عِندَ اللَّهِ مَکرُهُم وَ إن کانَ مَکرُهُم لِتَزُولَ مِنهُ الجِبال؛ فَلا تَحسَبَنَّ اللَّهَ مُخلِفَ وَعدِهِ رُسُلَهُ إنَّ اللَّهَ عَزیزٌ ذُو انتِقام". (ابراهیم، 46 و 47) ( اور ان لوگوں نے اپنا سارا مکر صرف کر دیا اور خدا کی نگاہ میں ان کا سارا مکر ہے اگر چہ ان کا مکر ایسا کہ اس سے پہاڑ بھی اپنی جگہ سے ہٹ جائیں۔ تو خبردار تم یہ خیال بھی نہ کرنا کہ خدا اپنے رسولوں سے کئے ہوئے وعدہ کی خلاف ورزی کرے گا اللہ سب پر غالب اور بڑا انتقام لینے والا ہے)۔
بارگاہ الہی میں سجدہ شکر بجا لاتے ہوئے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی جانب سے اس عظیم فتح الفتوح کو آپ کی خدمت میں مبارکباد پیش کرتے ہیں نیز مختلف ملکوں کے مدافع حرم عزیز شہیدوں کی یاد کو تازہ کرتے ہوئے انکے ساتھ عہد کرتے ہیں کہ ان کی امانتوں کی حفاظت میں ہمیشہ کوشاں رہیں گے۔

با احترام
محمد حسن اختری
سیکرٹری جنرل اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی

داعش پر عظیم کامیابی کے بعد رہبر انقلاب اسلامی کو اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا تہنیتی پیغام

داعش پر عظیم کامیابی کے بعد رہبر انقلاب اسلامی کو اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا تہنیتی پیغام

عراق و شام میں عالمی استکبار کی روٹیوں پر پلنے والے تکفیری ٹولے داعش کی بھاری شکست اور مزاحمتی قوتوں کی عظیم کامیابی کے بعد اہل بیت عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے رہبر انقلاب اسلامی حضرت آیت اللہ العظمیٰ سید علی خامنہ ای مد ظلہ العالی کو ایک تہنیتی پیغام کے ذریعے ہدیہ تبریک پیش کیا ہے۔
اس تہنیتی پیغام کا ترجمہ کچھ یوں ہے:
بسم الله الرحمن الرحیم
للهِ الأمرُ مِن قَبلُ و مِن بَعدُ و يَومَئِذٍ يَفرَحُ المُؤمِنُون؛ بِنَصرِ اللهِ يَنصُرُ مَن يَشَاءُ و هُوَ العَزیزُ الرَّحيم. (روم، 4 و 5)
(اللہ ہی کے لئے اول و آخر ہر زمانے کا اختیار ہے اور اسی دن صاحبان ایمان خوشی منائیں گے اللہ کی نصرت اور مدد کے سہارے کہ وہ جس کی امداد چاہتا ہے کردیتا ہے اور وہ صاحب عزت بھی ہے اور مہربان بھی)

محضر مبارک حضرت آیت الله العظمی امام خامنه‌ای مد ظله العالی
رہبر انقلاب اسلامی و فرماندہ محترم کل قوا
سلام علیکم
انتہائی خوشی اور افتخار کا مقام ہے کہ ماہ ربیع الاول کے مبارک ایام جو پیغمبر اکرم صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی ولادت کے ایام ہیں اور آپ کی اس ہجرت کی یاد تازہ کرتے ہیں جو پروقار اسلامی تمدن کا زمینہ ساز بنی، میں ’’اصلاح اور مزاحمت کی قوتوں‘‘ کو ’’دھشتگرد اور باطل طاقتوں‘‘ پر عظیم کامیابی نصیب ہوئی۔
خداوند عالم کا شکرگزار ہیں کہ  اس نے دھشتگرد اور تکفیری ٹولیوں منجملہ ’’ انسان کش خونخوار داعش‘‘ کہ جو وہابی تکفیری تفکر، آل سعود، آل یہود اور دیگر تشدد پسندانہ شیطانوں کی مالی حمایت اور امریکہ، برطانیہ، صہیونی ریاست اور اس کے اتحادیوں کی اسلحہ جاتی پشت پناہی کے ساتھ چھے سال علاقے میں طغیان گری اور خون خرابے میں مصروف تھے کی نابودی کو آپ جناب کے مبارک ہاتھوں میں مقدر کیا اور آپ کو مزید عزت اور سربلندی سے نوازا نیز ایران کی شہید پرور قوم کے فخر و مباہات میں اضافہ فرمایا۔
آج ان ربیع المولود کے مبارک ایام میں، امت مسلمہ کو یہ عظیم کامیابی نصیب ہوئی اور اللہ کا یہ سچا وعدہ جو ان صاحبان ایمان کے لیے ہے جو ظالموں کے مقابلے میں اللہ کی قدرت پر ایمان رکھتے ہیں، محقق ہو گیا: "و قَد مَکَرُوا مَکرَهُم وَ عِندَ اللَّهِ مَکرُهُم وَ إن کانَ مَکرُهُم لِتَزُولَ مِنهُ الجِبال؛ فَلا تَحسَبَنَّ اللَّهَ مُخلِفَ وَعدِهِ رُسُلَهُ إنَّ اللَّهَ عَزیزٌ ذُو انتِقام". (ابراهیم، 46 و 47) ( اور ان لوگوں نے اپنا سارا مکر صرف کر دیا اور خدا کی نگاہ میں ان کا سارا مکر ہے اگر چہ ان کا مکر ایسا کہ اس سے پہاڑ بھی اپنی جگہ سے ہٹ جائیں۔ تو خبردار تم یہ خیال بھی نہ کرنا کہ خدا اپنے رسولوں سے کئے ہوئے وعدہ کی خلاف ورزی کرے گا اللہ سب پر غالب اور بڑا انتقام لینے والا ہے)۔ 
بے شک یہ نصرتِ عظیم جناب اعلیٰ کی حکیمانہ تدبیروں اور دقیق حمایتوں کی مرہون منت ہے جو باعث بنی ایران، عراق، لبنان، شام، افغانستان اور پاکستان کے فی سبیل اللہ مجاہدوں کی جانفشانیاں اور مجاہدتیں مثمر ثمر واقع ہوں۔
آپ کی رہبری، عالم تشیع کی مرجعیت کے فتوے اور مدافع حرم دلیروں کی مجاہدتوں کہ جن میں سرفہرست کمانڈر ان چیف قاسم سلیمانی اور حجت الاسلام و المسلمین سید حسن نصر اللہ کی بابصیرت، شجاع اور مدبرانہ کاوشیں ہیں کی بدولت آج ہمارا علاقہ داعش کے نجس وجود سے پاک ہو گیا ہے اور حرم اہل بیت(ع) اور ان کے پیروکاروں کے گھروں میں دوبارہ امن و سکون پلٹ آیا ہے۔
بارگاہ الہی میں دوبارہ شکرگزاری کرتے ہوئے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی جانب سے عظیم فتح الفتوح کو جناب اعلیٰ نیز تمام مسلمانان عالم اور موحدین جہان کی خدمت میں مبارکباد پیش کرتے ہیں اور آپ جناب کے واسطے کلمہ اسلام کی ہمیشہ سربلندی اور عظمت کی قادر متعال سے دعا مانگتے ہیں۔
اسی طرح کامیابی کے ان شیریں ایام میں امام راحل’’خمینی کبیر‘‘ کی یاد کو تازہ کرتے ہیں جنہوں نے ان درخشاں کامیابیوں کی پیش گوئی کی ہوئی تھی، اور مختلف ملکوں کے مدافع حرم عزیز شہیدوں کے ساتھ عہد کرتے ہیں کہ ان کی امانتوں کی حفاظت میں ہمیشہ کوشاں رہیں گے۔
و يُرِيدُ اللّهُ أَن يُحِقَّ الحَقَّ بِكَلِمَاتِهِ و يَقطَعَ دَابِرَ الكافِرِين؛ لِيُحِقَّ الحَقَّ و يُبطِلَ البَاطِلَ و لَو كَرِهَ المُجرِمُون. (انفال، 7 و 8)
( اور اللہ اپنے کلمات کے ذریعے حق کو ثابت کرنا چاہتا ہے اور کفار کے سلسلے کو قطع کر دینا چاہتا ہے تاکہ حق ثابت ہو جائے اور باطل فنا ہو جائے چاہے مجرمین اسے کسی قدر ناپسند کیوں نہ سمجھیں۔)
با احترام
محمد حسن اختری
سیکرٹری جنرل اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی
۲۲،۱۱،۲۰۱۷

تصویری رپورٹ/اہل بیت(ع) عالمی اسملبی کے سیکرٹری جنرل کا زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ

تصویری رپورٹ/اہل بیت(ع) عالمی اسملبی کے سیکرٹری جنرل کا زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ

 اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے ایران کے زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ کر کے زلزلے میں زخمی ہوئے افراد کی عیادت کی۔

اہل بیت(ع) عالمی اسملبی کے سیکرٹری جنرل کا زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ+ تصاویر

اہل بیت(ع) عالمی اسملبی کے سیکرٹری جنرل کا زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ+ تصاویر

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل حجۃ الاسلام و المسلمین محمد حسن اختری نے ایران کے زلزلہ زدہ علاقوں کا دورہ کر کے زلزلے میں زخمی ہوئے افراد کی عیادت کی۔
انہوں نے ڈاکٹروں کی ایک ٹیم کے ہمراہ امام خمینی (رہ) ہسپتال میں حاضر ہو کر زخمیوں کے علاج و معالجہ کا قریب سے جائزہ لیا اور ڈاکٹروں سے اس بارے میں گفتگو کی۔
زلزلہ سے متاثر ہوئے افراد نے اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کے سیکرٹری جنرل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے رہبر انقلاب اسلامی کی ان کے تئیں خاص توجہات کی قدردانی کی اور آپ سے دعا کی درخواست کی۔
واضح رہے کہ ایران کے صوبہ کرمانشاہ میں آئے گزشتہ ہفتے زلزلے کے نتیجہ میں ۴۳۶ سے زائد افراد جانبحق اور ۹۳۸۸ افراد زخمی ہوئے جبکہ انتہائی مالی نقصان ہوا ہے۔

محبت اہل بیت(ع) امت مسلمہ کے اتحاد کا اہم سبب اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے اجلاس کا اختتامی بیان

محبت اہل بیت(ع) امت مسلمہ کے اتحاد کا اہم سبب اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے اجلاس کا اختتامی بیان

اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کا ۱۷۶ واں اجلاس لبنان کے دار الحکومت بیروت میں منعقد ہوا جس کے اختتام پر ایک اہم بیان جاری کیا گیا۔
اختتامی بیان کا مکمل ترجمہ:
بسم اللہ الرحمن الرحیم
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ کے ایک سو چھتر ویں اجلاس کا اختتامی بیان
اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی کی مجلس اعلیٰ نے مورخہ ۳ تا ۶ نومبر ۲۰۱۷ کو ’’محبت اہل بیت(ع) وحدت بشریت اور اتحاد بین المسلمین کا عامل ‘‘ کے زیر عنوان اپنا ایک سو چھترواں اجلاس منعقد کیا اور اس میں عالم اسلام سے متعلق اہم مسائل کو زیر بحث لایا گیا۔
مجلس اعلیٰ نے ۱۴ شقوں پر مشتمل ایک بیان کے ساتھ اس اجلاس کو اختتام تک پہنچایا:
اسلامی امت بہت سارے ممالک میں سخت حالات سے گزر رہی ہے اور اسلام کے دشمن، امت مسلمہ کو پاش پاش کر کے اسے جنگ و جدال میں گرفتار رکھنے کی پوری کوشش کر رہے ہیں تاکہ اس طریقے سے وہ مسلمانوں پر اپنا تسلط باقی رکھ سکیں، ان کے اموال کو غارت کر سکیں اور مسلمانوں کو اقتصادی سماجی، علمی اور ثقافتی پسماندگی کا شکار بنا سکیں۔
دشمن مشرق وسطیٰ سے حاصل کردہ اپنے گزشتہ تجربوں سے بھرپور فائدہ اٹھاتے ہوئے کوشاں ہیں کہ اس خطے پر انحرافی افکار مخصوصا وہابی انتہا پسندی پر مبنی سوچ کو رائج کر کے اس خالص اور اعتدال پسند دین محمدی(ص) کے چہرے کو مسخ کریں جو محبت، ہمدردی، اتحاد اور ترقی کے اصول پیش کرتا ہے اور اسلام اور مسلمانوں کو دنیا میں فتنہ و فساد، قتل و غارت، جرم و جارحیت اور دھشتگردی کے عوامل کے عنوان سے پہچنوائیں۔
دشمنوں کی سازشیں اور پروپیگنڈے اس قدر قوی ہیں کہ انہوں نے دین اسلام کہ جو اللہ کا سب سے زیادہ خوبصورت، کامل اور مکمل دین ہے کے چہرے کو بگاڑ کر رکھ دیا ہے حتی کہ بہت سارے لوگوں کو دین سے دور کرنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ حالانکہ انسان الہی فطرت کی بنا پر دین کا تابع ہوتا ہے۔ وہ بھی ایسا دین کہ جس کے بانی رسول خدا(ص)، ان کے اہل بیت(ع) اور باوفا اصحاب نے اپنی جانثاری، فداکاری اور محبت آمیز طرز زندگی کے ذریعے انسانی معاشرے کے لیے عزت و سربلندی کی قدروں کو پہچنوایا۔
لہذا ان چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کے لیے جو امت مسلمہ اور عالم بشریت کو دھمکا رہے ہیں ضروری ہے کہ درج ذیل نکات پر اپنی توجہ مرکوز کریں:
۱؛ عالم بشریت اور پوری امت مسلمہ کو تمام فرقوں سمیت اس بات کی دعوت دیتے ہیں کہ زیادہ سے زیادہ رسول خدا(ص) اور ان کے اہل بیت اطہار(ع) کی تعلیمات کو سیاسی، سماجی اور عملی تناظر سے پہچاننے کی کوشش کریں۔
۲؛ تمام مسلمانوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہابی دھشتگردانہ افکار کی مذمت کریں اور ان بدبختیوں کو جنہیں آل سعود اور انکے مغربی امریکی حامیوں نے عالم اسلام میں جنم دیا، جڑ سے اکھاڑ کر پھینک دیں۔
۳؛ عالم اسلام کے علماء، مصنفین اور محققین کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ مناسب ثقافتی آثار وجود میں لا کر حقیقی اسلام کو دوسروں تک منتقل کرنے کی کوشش کریں، حقیقی اسلام وہی اہل بیت(ع) کا دین ہے جسے دنیا کے تمام ممالک تک پھیلنا چاہئے۔
۴؛ ان مسلمان جوانوں جو دشمن کی انحرافی تبلیغات کی وجہ سے گمراہ ہو چکے ہیں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ ماضی کے تلخ اور شکست خوردہ تجربوں سے عبرت حاصل کرتے ہوئے حقیقی اور اصلی اسلام کی آغوش میں واپس پلٹ آئیں۔
۵؛ امت مسلمہ کے درمیان اتحاد اور تعاون کی ثقافت کے رواج اور اختلافی مسائل سے اجتناب پر تاکید کرتے ہیں اور مسلمانوں کی توجہ کو استکباری پروپیگنڈوں کے مقابلے میں یکجہتی، اپنے ممالک کے استقلال اور امنیت کے تحفظ نیز مقبوضہ اسلامی ملکوں (فلسطین اور بیت مقدس) کی آزادی کی طرف مرکوز کرتے ہیں۔
۶؛ لبنان اور فلسطین میں ان مزاحمتی تحریکوں کی حمایت کرتے ہیں جو صہیونیت کے مقابلے میں ڈٹی ہوئی ہیں، اور اس نقلی، جارح اور ستمگر ریاست کی ہر احتمالی جارحیت کے سامنے سینہ سپر ہیں۔ نیز ہم شرم آور بیلفور بیان کی پہلی صدی کی سالگرہ پر اس کی شدید مذمت کرتے ہیں۔
۷؛ امریکی صہیونی سازشوں کو ناکام بنانے کی راہ میں عراق اور شام کو حاصل ہوئی کامیابیوں پر انہیں مبارک باد پیش کرتے ہوئے امید ظاہر کرتے ہیں کہ داعش اور دیگر وہابی دھشتگرد ٹولوں پر مکمل کامیابی، مزاحمت کے مراکز کو زیادہ سے زیادہ مستحکم بنانے پر منحصر ہے۔
۸؛ ہم آل سعود اور اس کے اتحادیوں کی جارحیت جو وہ یمن کے مظلوم اور بحرین کے غیور عوام کی نسبت روا رکھے ہوئے ہیں کی سختی سے مذمت کرتے ہیں اور اس ظالم اور ستمگر رژیم کے مقابلے میں سخت موقف اپنانے کا مطالبہ کرتے ہیں۔
۹؛ ہم تکفیری اور دھشتگرد ٹولوں کا تختہ الٹنے میں افغانستان اور پاکستان کی کوششوں کی حمایت کرتے ہیں اور ان کے عوام کے تعاون کی قدردانی کرتے ہیں جو ان دو ملکوں کی عزت و سربلندی کے لیے جد و جہد کر رہے ہیں۔
۱۰؛ ہم ہمیشہ دنیا کی مظلوم قوموں، مخصوصا کشمیراور نائیجیریا سے لے کر برما تک کے مسلمانوں کے ساتھ ہیں اور ان کی حمایت کا اعلان کرتے ہیں اور برما میں روہنگیا مسلمانوں کے بہیمانہ قتل عام کے خاتمہ کا فوری مطالبہ کرتے ہیں۔
۱۱؛ علماء، بزرگوں اور سنجیدہ ملتوں کی حقیقی اسلام کے تئیں سیاسی بصیرت جو اس وقت پوری دنیا میں نظر آ رہی ہے عالم اسلام کے روشن، پرامید اور تابناک مستقبل کی نوید ہے۔
۱۲؛ ہم ولی امر مسلمین امام خامنہ ای( مدظلہ) اسلامی جمہوریہ ایران اور ملت ایران کا شکریہ ادا کرتے ہیں جو دنیا کی مسلمان اور مستضعف ملتوں کی ہمیشہ حمایت کرتے ہیں اور اسلام و مسلمین کے دفاع کی راہ میں اپنے جگر کے ٹکڑوں کو قربان کرتے ہیں۔ ہم تہہ دل سے ان کی قدردانی کرتے ہوئے یہ اعلان کرتے ہیں کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف دشمنی پر مبنی تمام پالیسیاں قابل نفرت ہیں لہذا حریت پسند ممالک کو چاہیے کہ ایران کی طرف دست تعاون و دوستی بڑھا کر دشمنوں کی خطرناک سازشوں کو ناکام بنائیں۔
رہبر کبیر انقلاب اور اسلامی بیداری کے بانی امام خمینی (قدس سره الشریف) کہ جو انبیاء اور اہل بیت(ع) کے راستے کے واقعی پیروکار تھے کی پاک روح پر درود و سلام بھیجتے ہیں اور تمام مسلمانوں کو اس بات کی طرف عملی دعوت دیتے ہیں کہ وہ امام راحل کے آفاقی افکار کو معاشرے کی اصلاح اور موجودہ صورتحال کی بہتری کے لیے بروئےکار لائیں۔ نیز شہداء و مجاہدین فی سبیل اللہ کی پاک روحوں پر درود بھیجتے ہیں۔
۱۴؛ آخر میں حزب اللہ لبنان کے سیکرٹری جنرل مجاہد علامہ سید حسن نصر اللہ (دام عزہ) کی میزبانی اور مہمانوازی کا انتہائی شکریہ ادا کرتے ہیں اور اس ملک کے عوام، فوج، مزاحمتی فورس اور صدر جمہوریہ کا بھی شکریہ ادا کرتے ہیں۔ اور صہیونی رژیم کے استکباری منصوبوں کہ جن میں سرفہرست وہابی فکر کے رائج کرنے کا منصوبہ ہے کے مقابلے کے لئے اس ملک کے تعاون کی قدردانی کرتے ہیں۔
مجلس اعلیٰ اہل بیت(ع) عالمی اسمبلی
بیروت، ۶ نومبر ۲۰۱۷               

[12 3 4 5  >>  

جدیدترین نرم افزارها

جدیدترین نرم افزارها

مراکز و پایگاه‌های وابسته

عالمی اہل بیت اسمبلی

مجمع جهانی اهل‎بیت(علیهم‎السلام)، به عنوان یک تشکل جهانی و غیردولتی، از طرف گروهی از نخبگان جهان اسلام تشکیل شده است. اهل‎بیت(علیهم‎السلام) به این دلیل بعنوان محور فعالیت انتخاب شده‎اند که در معارف اسلامی در کنار قرآن، محوری مقدس را که مورد پذیرش عامه مسلمین باشد، تشکیل می‎دهند.
مجمع جهانی اهل‎بیت(علیهم‎السلام) دارای اساسنامه‎ای مشتمل بر هشت فصل و سی و سه ماده است.

  • ایران - تهران - بلوارکشاورز - نبش خیابان قدس - پلاک 246
  • 888950827 (0098-21)
  • 888950827 (0098-21)

ہم سے رابطہ کریں

موضوع
دوستوں کوارسال کریں
خط
9-2=? سیکورٹی کوڈ